درس القرآن ماہ اپریل ۲۰۲۰

وَلَوْ لَا فَضْلُ اللّٰہِ عَلَیْکَ وَ رَحْمَتُہٗ لَھَمَّتْ طَّائِفَۃٌ مِّنْھُمْ اَنْ یُضِلُّوْکَ ط وَمَا یُضِلُّوْنَ اِلَّآ اَنْفُسَھُمْ وَمَا یَضُرُّوْنَکَ مِنْ شَیْئٍ ط وَ اَنْزَلَ اللّٰہُ عَلَیْکَ الْکِتٰبَ وَالْحِکْمَۃَ وَعَلَّمَکَ مَا لَمْ تَکُنْ تَعْلَمُ ط وَکَانَ فَضْلُ اللّٰہِ عَلَیْکَ عَظِیْمًا۔  (النساء :  114 )

 ترجمہ :

  اور اگر تجھ پر اللہ کا فضل اور اس کی رحمت نہ ہوتے تو ان میں سے ایک گروہ نے تو ارادہ کر رکھا تھا کہ وہ ضرور تجھے گمراہ کردیں گے۔ لیکن وہ اپنے سوا کسی کو گمراہ نہیں کرسکے۔ اور وہ تجھے ہرگز کوئی نقصان نہیں پہنچا سکیں گے۔ اور اللہ نے تجھ پر کتاب اور حکمت اتارے ہیں اور تجھے وہ کچھ سکھایا ہے جو تو نہیں جانتا تھا۔ اور تجھ پر اللہ کا فضل بہت بڑا ہے۔  (ترجمہ از حضرت خلیفۃ المسیح الرابع  ؒ)

تشریح :

میں تم کو قرآن شریف سناتا ہوں۔ مدعا اس سے میرا یہ ہوتا ہے کہ تم اس پر عمل کرو اور عمل کرکے اس سے نفع اٹھائو۔ قران کریم پر عمل کرنے سےانسان کے آٹھ پہر خوشی سے گزرتے ہیں۔ قرآن شریف پر عمل کرنے سے انسان کو خوشی و عزت اور کم سے کم بندوں کی اتباع اور محتاجی سے نجات ملتی ہے۔

اَنْ یُضِلُّوْکَ :۔  خبردار ہوجائو ایک گروہ اس کوشش میں لگا ہوا ہے کہ تم گمراہ ہوجائو۔

وَمَا یَضُرُّوْنَکَ مِنْ شَیْئٍ :۔  اگر تم قرآن شریف پر توجہ رکھو تو تم گمراہ کرنے والوں کی کوششوں سے محفوظ رہ سکتے ہو۔ یورپ والوں نے کس قدر ترقی کی ہے لیکن دیکھو ایک بندہ کو خدا بنا لیا ۔ آریہ  وَحْدَہٗ لاَ شَرِیْکَ لَہٗ نہیں کہہ سکتے۔

وَعَلَّمَکَ مَا لَمْ تَکُنْ تَعْلَمُ  :۔  دیکھو نبی کریمؐ ایسے انسان کو ارشاد ہے کہ اگر قرآن شریف نہ آتا تو تجھ کو کچھ نہ آتا۔ بھلائی اور برائی سمجھنے کا ایک ہی ذریعہ : قرآن شریف ہے۔

کَانَ فَضْلُ اللّٰہِ عَلَیْکَ عَظِیْمًا :۔  اللہ تعالیٰ حضرت محمد رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے خلق کو عظیم فرماتا ہے اور ان پر جو فضل ہوا اسے بھی عظیم فرمایا۔ اب خیال کرو کہ جس کو خدا تعالیٰ نے عظیم کہا وہ کس قدر عظیم الشان ہوگا۔ اب جو رسول اس شان کا ہے اس کے بغیر ہم کو کسی اور کےمقتدا( امام) بنانے کی ریجھ (چاہت) بھی کیا ہوئی۔

 {حقائق الفرقان جلد دوم صفحہ 57}

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *