(راغب مراد آبادی)

مدح خوانِ سرور بطحا ہیں ثاقب زیروی

مستحقِ جنّت الماویٰ ہیں ثاقب زیروی

جانتے ہیں مُرسِل و مُرسَل کا فرق و امتیاز

نعت گو اس وصف یکتا ہیں ثاقب زیروی

نعت گوئی کی بحمد اللہ اِس انداز سے

محفلِ سرکارؐ میں گویا ہیں ثاقب زیروی

٭ سالک مرحوم بھی تھے ان کے اوصاف آشنا

اب نہ پُوچھے مجھ سے کوئی کیا ہیں ثاقب زیروی

دولتِ سرمد ہے یہ مجموعہ نعتِ رسولؐ

فیض یاب ربّی الاعلےٰ ہی ثاقب زیروی

شمع حُبِّ احمدؐ مرسل ہی دل میں ضَوفگن

بےنیاز دولتِ دنیا ہیں ثاقب زیروی

جُملہ اصناف میں سُخن میں شعر گوئی کی مگر

نعت میں بھی مثل آپ اپنا ہیں ثاقب زیروی

ہے صحافت میں بھی حق گوئی و بے باکی پہ ناز

بندۂِ حق گو مِرے مولا ہیں ثاقب زیروی

حرفِ حق کہنے سے باز آجائیں ممکن ہی نہیں

نرغہ اعداء میں گو تنہاء ہیں ثاقب زیروی

نعت گوئی ہی کا اے راغب یہ اِک اعجاز ہے

وارثِ فکرِ فلک پیما ہیں ثاقب زیروی

٭ (مولانا عبدالمجید خان سالک)

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *